اے پی پی ایس اے کا کہنا ہے کہ 50 فیصد نجی اسکول مستقل طور پر بند ہوسکتے ہیں

اے پی پی ایس اے کا کہنا ہے کہ 50 فیصد نجی اسکول مستقل طور پر بند ہوسکتے ہیں

اے پی پی ایس اے کا کہنا ہے کہ 50 فیصد نجی اسکول مستقل طور پر بند ہوسکتے ہیں

آل پاکستان پرائیویٹ اسکول ایسوسی ایشن نے گورنر پنجاب ، چوہدری محمد سرور سے اپیل کی ہے کہ وہ ہزاروں نجی اسکولوں کو بچانے کے لیے فوری طور پر نوٹس لیں جو کورونا وائرس کے وبائی مرض سے ہونے والے نقصان کی وجہ سے مستقل طور پر بند ہوسکتے ہیں۔

اے پی پی ایس اے کے صدر کاشف مرزا اور 8 رکنی وفد نے گورنر پنجاب سے ملاقات کی جس میں انہوں نے کورونا وائرس کے باعث ہونے والی اسکول کی بندشوں کے دوران نجی اسکولوں کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا۔

ملاقات میں بات چیت کرتے ہوئے کاشف مرزا نے کہا کہ ہمیں نجی اسکولوں کو مستقل طور پر بند ہونے سے بچانا ہوگا۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ حکومت کو جلد سے جلد اسکولوں کو دوبارہ کھولنا چاہئے کیونکہ اس نے دوسرے اداروں کو دوبارہ کھولنے کی اجازت دی ہے۔

 کاشف مرزا نے کہا کہ صبح اور دوپہر کو دو شفٹوں میں تعلیمی سیشن کا آغاز کرکے سماجی دوری کے عنصر کو نافذ کیا جاسکتا ہے۔ اگر حکومت اس معاملے کو سنجیدگی سے نہیں لیتی ہے تو ہمیں خدشہ ہے کہ 50 فیصد نجی اسکول مستقل طور پر بند ہوجائیں گے اور 10 لاکھ سے زیادہ افراد بے روزگاری کا شکار ہوں گے۔ مرزا نے مزید کہا کہ پاکستان میں پہلے ہی ڈھائی لاکھ سے زیادہ بچے اسکولوں سے باہر ہیں۔ اس صورتحال میں 50 لاکھ مزید بچوں کا آئینی طور پر تعلیم حاصل کرنے کے حق سے محروم ہونے کا ناقابل برداشت نقصان ہوگا۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہونے والے ممالک نے اسکول دوبارہ کھول دیئے ہیں۔ بھارت، ایران، سری لنکا، چین، برازیل، بنگلہ دیش، امریکہ، سعودی عرب، ہانگ کانگ اور دیگر یورپی ممالک جو کووڈ نائنٹین سے سب سے زیادہ متاثر ہوئے تھے انہوں نے اسکول دوبارہ کھول دیئے ہیں۔

کاشف مرزا نے گورنر پنجاب کو مزید بتایا کہ نجی اسکولوں کا 90 فیصد کرایہ کی عمارتوں پر قائم ہے اور اساتذہ اور عملے کی تنخواہوں کا انحصار طلباء سے وصول کی جانے والی فیس پر ہوتا ہے۔ مرزا نے کہا کہ اسکول بند ہونے کی وجہ سے والدین نے چار ماہ سے فیسیں ادا نہیں کی ہیں اور اس پریشان کُن صورتحال میں اسکول مستقل طور پر بند ہونا شروع ہوگئے ہیں۔  

انہوں نے درخواست کی کہ اگر جولائی میں نہیں تو حکومت کو اگست میں اسکولوں کو دوبارہ کھولنے کی اجازت دینی چاہیے۔

اس موقع پر گورنر پنجاب چوہدری سرور نے اے پی پی ایس اے کے صدر کو یقین دلایا کہ وہ اس معاملے کو وزیر اعظم اور صدر پاکستان کے سامنے اٹھائیں گے تاکہ نجی اسکولوں کو مزید بندش سے بچانے کے لیے کوئی راستہ تلاش کیا جاسکے۔

تمام مواد کے جملہ حقوق محفوظ ہیں ©️ 2021 کیمپس گرو

کیا آپ کے ذہن میں کوئی سوال ہے
ڈسکس کریں

× کلک کریں